پرندے کی پہلی اڑان

4-17-2014_002




حمد باری تعالیٰ: جبینِ شوق کے قرطاس پر تو زندگی لکھھ دے

حمد باری تعالیٰ: تورحیم ہے،تو کریم ہے،توجمیل ہے توجمال ہے

نعتِ پاک: کرتا ہوں اپنے کام میں صلِ علیٰ کے ساتھھ

نعتِ پاک: مدینے سےاشارامل گیا ہے

نعتِ پاک: نسیم صبح یثرب جا گزر کر

غزل: حاصلِ زیست مری جان بنا دی جاۓ

غزل: اُسے میں دل دکھانا چاوہتا ہوں

غزل: خبر نہیں تجھے تیرا خیال کتنا ہے

غزل: کیوں نہ گیسو ترے اس وقت سنوارے جائیں

غزل: یوں لاجواب کیا ہے مجھےدلیل کےساتھھ

غزل: مات کھائی نہ کبھی جوروجفاکےآگے

غزل: مجھےیہ ایک بھیانک ساخواب لگے

غزل: ایسے اجڑا ہوں کہ تقدیر لہوروتی ہے

غزل: مجھے سہانےوہ خواب دے کے بھی خوش نہیں تھا

غزل: پھنکارتے ہیں ناگ کئی لہر لہر سے

غزل: اسے بہار نہ کرتاتواورکیاکرتا

غزل: کوئی جودیکھےاسےچہرہ زرد ہوجاۓ

غزل: آغوش تیری اسلیےماںچھوڑتےنہیں

غزل: ارادے بننے لگتاہوںتسلسل ٹوٹ جاتا ہے

غزل: آتی نہیں ہے نیند ہمیں رات کیا کریں

غزل: ہوا کفارے سے بھی کوئی چارا؟

غزل: چھنے جاتے ہیں شب سےسب سہارے

غزل: مرے مرنے پہ بھی آیا نہیں ہے

کوئی تو کام مجھے زندگی میں کرنا تھا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *